سرورق / بین اقوامی / اسرائیلی مظالم کے خلاف عالم اسلام کی خود قیادت کروں گا:اردگان نہتے فلسطینیوں کا قتل عام انسانیت کے خلاف جرم ہے: لبنانی صدر، تعزیتی تقریب پر صہیونی بزدلوں کی دہشت گردی، پانچ فلسطینی زخمی –

اسرائیلی مظالم کے خلاف عالم اسلام کی خود قیادت کروں گا:اردگان نہتے فلسطینیوں کا قتل عام انسانیت کے خلاف جرم ہے: لبنانی صدر، تعزیتی تقریب پر صہیونی بزدلوں کی دہشت گردی، پانچ فلسطینی زخمی –

انقرہ، (ایجنسی)ترکی کے صدر رجب طیب اردگان نے کہا ہے کہ صہیونی ریاست کے فلسطینیوں کے خلاف مظالم کی روک تھام کے لئے عالم اسلام کی خود قیادت کروں گا ۔اطلاعات کے مطابق ترک صدراردگان نے ان خیالات کا اظہار ایرانی صدر حسن روحانی کے ساتھ ٹیلیفون پر بات چیت میں کیا۔ انہوں نے کہا کہ جمعہ کے روز استبول میں ہونے والی اسلامی تعاون تنظیم کے اجلاس میں فلسطینیوں پر اسرائیلی مظالم کو کھل کر بیان کیا جائے گا۔صدر اردگان نے روسی صدر ولادی میر پیوٹن، جرمن چانسلر انجیلا مریکل اور پایائے روم پوپ فرانسیس سے بھی ٹیلیفون پر بات چیت کی۔اناطولیہ نیوز ایجنسی کے مطابق ترک صدر رجب اردگان اور ان کے ایرانی ہم منصب حسن روحانی سے ٹیلیفون پر بات چیت کی۔ دونوں رہ نماؤں نے امریکی سفارت خانے کی القدس منتقلی اور غزہ میں نہتے فلسطینی مظاہرین کے قتل عام کے باعث پیدا ہونے والی صورت حال پر تبادلہ خیال کیا۔دونوں رہ نماؤں نے القدس اور غزہ میں فلسطینی مظاہرین کے قتل عام کے تناظر میں اسلامی تعاون تنظیم کے اجلاس کی اہمیت پر روشنی ڈالی اور خٰطے میں جاری پیش رفت کے مطابق ایک دوسرے سے رابطے میں رہنے کی ضرورت پر زور دیا۔ادھر ایرانی ایوان صدر کی طرف سے جاری کردہ بیان میں کہا گیا ہے کہ ترک صدر کے ساتھ بات چیت میں دونوں رہ نماؤں نے اسرائیل کے خلاف متفقہ موقف اختیار کرنے پر زور دیا۔ان کا کہنا تھا کہ امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کی جانب سے سفارت خانے کی القدس منتقلی خطرناک اقدام ہے، عالم اسلام کو اس کا مل کر جواب دینا ہوگا۔ ترک صدر نے اپنے روسی ہم منصب ولادی میر پیوتن سے بھی ٹیلیفون پر بات چیت کی۔ دوسری جانب خلیجی ریاست قطر کی حکومت نے فلسطینی پناہ گزینوں کی بہبود کے لئے پانچ کروڑ ڈالر کی امداد کا اعلان کیا ہے۔ یہ رقم اقوام متحدہ کے فلسطینی پناہ گزینوں کی بہبود کے ذمہ دار ادارے’ او ڈبلیو این اے ار ڈبلیو اے(اونروا) کے توسط سے ادا کی جائے گی۔ اطلاعات کے مطابق فلسطینی پناہ گزینوں کے لئے قائم کردہ ریلیف اینڈ ورکس ایجنسی(اونروا)نے ایک بیان میں بتایا ہے کہ جاپان نے شام میں مقیم فلسطینی پناہ گزینوں کی صحت، نقد ہنگامی امداد اور دیگر شعبوں میں مدد کے لئے پانچ کروڑ ڈالرکی اضافی امداد کا اعلان کیا ہے۔ رقم کا کچھ حصہ لبنان اور اردن میں آنے والے فلسطینی پناہ گزینوں کے لئے بھی مختص کیا جائیگا۔’اونروا‘ کے ہائی کمشنر نے فلسطینی پناہ گزینوں کے لئے اضافی امداد پر ٹوکیو کا خصوصی شکریہ ادا کیا ہے۔ ان کا کہنا تھا کہ ایک ایسے وقت میں جب فلسطینی پناہ گزینوں کی ذمہ دار ایجنسی کو مالی مسائل کا سامنا ہے دوحہ کی طرف سے ایثار کا مظاہرہ کرتے ہوئے فلسطینی پناہ گزینوں کے لئے ایک کروڑ ڈالر کی امداد باعث تحسین ہے۔ اس پر ہم جاپانی حکومت کے بے حد شکر گذار ہیں۔خیال رہے کہ ’اونروا‘ نے رواں سال کے آغاز میں 409 ملین ڈالر کی امداد جمع کرنے کی مہم شروع کی تھی۔ یہ مہم ایک ایسے وقت میں شروع کی گئی جب فلسطینی پناہ گزین ایجنسی کو مالی مشکلات اور بحران کا سامنا کرنا پڑا۔ جاپان نے گذشتہ برس 4 کروڑ 33 لاکھ ڈالر کی امداد فراہم کی تھی۔ اس میں 2 کروڑ 30 لاکھ ڈالر ’اونروا‘ کی عمومی سروسز اور 8.7 ملین ڈالر کی رقم شام میں فلسطینی پناہ گزینوں کی بہبود کے لئے دی گئی تھی۔وہیں لبنان کے صدر العماد میشل عون نے فلسطین کے علاقے غزہ کی پٹی میں اسرائیلی فوج کی وحشیانہ کارروائیوں کی شدید الفاظ میں مذمت کرتے ہوئے بے گناہ فلسطینی مظاہرین کے قتل عام کو انسانیت کے خلاف جرم قرار دیا ہے۔ اطلاعات کے مطابق ایک بیان میں صدر عون نے کہا کہ غزہ میں بے گناہ فلسطینیوں کا قتل عام قابل مذمت اور انسانیت کے خلاف جرم ہے۔ ان کا کہنا تھا کہ عالمی وفود کے ساتھ ہونے والی ان کی ملاقاتوں میں غزہ میں فلسطینیوں کا قتل عام اور امریکی سفارت خانے کی مقبوضہ بیت المقدس اہم موضوع ہے۔انہوں نے کہا کہ امریکی سفارت خانے کی مقبوضہ بیت المقدس منتقلی کسی گہری سازش کا حصہ لگتی ہے۔ مقبوضہ بیت المقدس تین آسمانی مذاہب کے ہاں مقدس مقام ہے۔ ان کا کہنا تھا کہ استنبول میں ہونے والی او آئی سی کی ہنگامی کانفرنس میں لبنان کو شرکت کی دعوت دی گئی ہے۔ لبنانی وزیر خارجہ جبرال باسل ان کے ملک کی نمائندگی کریں گے۔ دریں اثنافلسطین کے علاقے غزہ کی پٹی کے مشرقی علاقے میں اسرائیلی فوج کی فائرنگ سے شہید ہونے والے فلسطینیوں کی یاد میں منعقدہ تعزیتی تقریب پر فائرنگ سے کم سے کم پانچ فلسطینی زخمی ہوگئے۔ اطلاعات کے مطابق غزہ کے جنوبی شہر خان یونس میں خزاعہ کے مقام پر ایک تعزیتی تقریب منعقد کی تھی جس میں 14 مئی روز شہید ہونے والے فلسطینیوں کے حوالے سے شہری تعزیت کے لئے آ رہے تھے۔ نامہ نگار نے بتایا کہ خان یونس کے مقام پر اسرائیلی فوج نے ایک فلسطینی تعزیتی کیمپ کو اکھاڑنے کے لئے اس پر فائرنگ کی جس کے نتیجے میں متعدد شہری زخمی ہوگئے۔ قابض فوج کی طرف سے تعزیتی کیمپ پر آنسوگیس کی شیلنگ بھی کی گئی۔خیال رہے کہ فلسطین کے علاقے غزہ کی پٹی کی مشرقی سرحد پر 14 مئی کو احتجاج کے لئے جمع ہونے والے فلسطینیوں پر قابض فوج نے فارئنگ کردی تھی جس کے نتیجے میں 60 فلسطینی مظاہرین شہید اور تین ہزار سے زائد زخمی ہوگئے تھے۔

Leave a comment

About saheem

Check Also

کروناندھی کی حالت بگڑی –

چنئی (ایجنسیز) تملناڈو کے سابق وزیر اعلیٰ اور ڈی ایم کے کے سربراہ ایم کروناندھی …

جواب دیں

%d bloggers like this: