سرورق / خبریں / اجودھیا تنازع : مسلم فریق کی کیس کو آئینی بینچ کو بھیجنے کی پرزور وکالت ، 15 مئی کو ہوگی اگلی سماعت –

اجودھیا تنازع : مسلم فریق کی کیس کو آئینی بینچ کو بھیجنے کی پرزور وکالت ، 15 مئی کو ہوگی اگلی سماعت –

نئی دہلی : اجودھیا معاملہ میں سپریم کورٹ کے چیف جسٹس کی سربراہی والی تین ججوں کی بینچ میں جمعہ کیس کی سماعت ہوئی ۔ سماعت کے دوران سنی وقف بورڈ کے وکیل راجو رام چندرن نے اپنی رپورٹ پیش کرتے ہوئے اس پر زور دیا کہ اس معاملہ کو بڑی آئینی بینچ کے سپرد کیا جائے ۔ رام چندرن نے عدالت سے اپیل کی یہ قومی اہمیت کے حامل اس معاملہ کی بڑے پیمانے پر منظوری ضروری ہے۔
ادھر ہندو مہا سبھا کے وکیل وشنو شنکر نے کیس کو آئینی بینچ کو بھیجے جانے کی مخالفت کی ہے۔ ان کا کہنا ہے کہ یہ معاملہ آئین کا نہیں ہے ، صرف ایک جائیداد تنازع ہے ، اس لئے اسے بڑی بینچ کو بھیجنے کی کوئی ضرورت نہیں ہے ۔ سپریم کورٹ نے اس کے بعد معاملہ کی اگلی سماعت کیلئے 15 مئی کی تاریخ مقرر کی ہے۔
دریں اثنا مسلم پرسنل لا بورڈ کے ترجمان کا کہنا ہے کہ یہ ایک ایسا معاملہ ہے ، جو ملک کے سماجی تانے بانے پر بھی اثر انداز ہوسکتا ہے، اس لئے اس معاملہ کو بڑی بینچ کو سونپا جائے۔

Leave a comment

About saheem

Check Also

کروناندھی کی حالت بگڑی –

چنئی (ایجنسیز) تملناڈو کے سابق وزیر اعلیٰ اور ڈی ایم کے کے سربراہ ایم کروناندھی …

جواب دیں

%d bloggers like this: