سرورق / خبریں / اترپردیش: لڑکی کے مذہب تبدیلی کا معاملہ : فروخت کرنے کے الزام میں پادری گرفتار –

اترپردیش: لڑکی کے مذہب تبدیلی کا معاملہ : فروخت کرنے کے الزام میں پادری گرفتار –

مہوبہ، اترپردیش کے مہوبہ میں دلت لڑکی کا مذہب تبدیل کرانے ، اسے فروخت کرنے اور عصمت دری کرنے کے الزام میں چرچ کے ایک پادری کو گرفتار کیا گیا ہے ۔ اعلی پولس افسر ونش راج یادو نے بتایا کہ صدر کوتوالی حلقہ میں یہ معاملہ روشنی میں آیا ہے کہ چرچ کے پادری فادر دیپک پاشٹرپر ہریجن بستی کی غریب دلت کنبے کی ایک 19سالہ لڑکی کو عیش و آرام کے جھانسہ دے کر پنجاب کے لدھیانہ کے باشندے عیسائی پھولچند بازیگر کو ایک لاکھ روپئے میں بیچ دےئے جانے کا الزام ہے ۔
انہوں نے بتایا کہ لڑکی کو بیچنے سے قبل پاشٹر دیپک نے ہند ٹائر گلی میں واقع اپنے چرچ میں اس کا نہ صرف مذہب تبدیل کرایا بلکہ عیسائی رسوم کے مطابق پھول چند کے ساتھ اس کی شادی بھی کرائی۔ انہوں نے بتایا کہ 8اگست 2017 کیو خفیہ طریقہ سے اس کی شادی کرائی گئی ۔ شادی کے بعد پاشٹر دیپک نے اپنی متعینہ رقم ایک لاکھ روپئے حاصل کرکے پھول چند کو مذکورہ لڑکی سونپ دی ۔اس سلسلے میں اس لڑکی کے گھر والوں کو کسی بھی قسم کی اطلاع نہیں دی گئی ۔ادھر لدھیانہ پہنچنے پر پھول چند نے لڑکی کو تکلیف پہنچاتے ہوئے نہ صرف جسمانی استحصال کا شکار بنایا بلکہ اس کے ساتھ کئی مرتبہ عصمت دری بھی کی۔ دو روز قبل پھول چند کے چنگل سے کسی طرح فرار ہوکرلڑکی اپنے گھر پہنچی اور گھر والوں کو پورے معاملے کی اطلاع دی ۔سینئر پولس افسر نے بتایا کہ پولس نے لڑکی کی شکایت پر عیسائی مذہبی رہنما پاشٹر دیپک وپھول چند کے خلاف آئی پی سی کی مختلف دفعات کے تحت مقدمہ درج کرکے کل رات اسے گرفتار کرکے جیل بھیج دیا ۔

Leave a comment

About saheem

Check Also

کروناندھی کی حالت بگڑی –

چنئی (ایجنسیز) تملناڈو کے سابق وزیر اعلیٰ اور ڈی ایم کے کے سربراہ ایم کروناندھی …

جواب دیں

%d bloggers like this: