سرورق / خبریں / آج حج کیمپ 2018ء کا افتتاح، یکم اگست سے حج پروازوں کا آغاز عازمین حج و رشتہ داروں کے لئے حج کیمپ میں بہتر انتظامات۔ منگلور حج گھر کے لئے اراضی جلد حاصل کرلی جائے گی۔ضمیراحمد خان

آج حج کیمپ 2018ء کا افتتاح، یکم اگست سے حج پروازوں کا آغاز عازمین حج و رشتہ داروں کے لئے حج کیمپ میں بہتر انتظامات۔ منگلور حج گھر کے لئے اراضی جلد حاصل کرلی جائے گی۔ضمیراحمد خان

بنگلورو۔امسال حج بیت اللہ کے لئے عازمین حج کی روانگی کا سلسلہ یکم اگست کی اولین ساعتوں سے شہر کی مضافات میں واقع کرناٹک حج بھون سے شروع ہوجائے گا۔حج بھون اور عارضی حج ٹرمنل میں عازمین حج کو روانہ کرنے کے لئے تمام تیاریاں مکمل ہوچکی ہیں ۔اس سلسلہ میں اخباری نمائندوں سے بات کرتے ہوئے ریاستی وزیر برائے حج، اوقاف ، اقلیتی امور و غذا وشہری رسدات بی زیڈ ضمیراحمد خان نے کہا کہ تمام عازمین حج کے لئے اس مرتبہ کھانے کا انتظام ریاستی حج کمیٹی چیرمین وسینئر رکن اسمبلی الحاج آر روشن بیگ نے اپنے ذمہ لیا ہے ۔انہوں نے اپنے صرف خاص سے عازمین کے لئے کھانے کے انتظام کی ذمہ داری لی ہے ۔ جبکہ حج کیمپ کی تاریخ میں پہلی مرتبہ عازمین حج کو وداع کرنے آئے تمام رشتہ داروں،رضاکاروں اور عوام کے لئے تینوں وقت کھانے کا انتظام وزیر موصوف نے اپنے صرفہ خاص سے کیا ہے جو آج ہی سے شروع ہو کر کیمپ کے اختتام تک جاری رہے گا۔ ہر دن 10ہزار افراد کے کھانے کاانتظام کیا گیا ہے ۔انہوں نے بتایا کہ عازمین کے رشتہ داروں کے لئے کھانا کھلانے کی ذمہ داری انہوں نے مسجد سلطان شاہ کے ذمہ داروں کے سپرد کی ہے ۔وزیر موصوف نے بتایا کہ 31جولائی کی شام 7بجے حج بھون کے احاطے میں ریاستی وزیراعلیٰ ایچ ڈی کمارسوامی حج پروازوں کے آغاز اور کیمپ کا افتتاح کریں گے ۔ انہوں نے بتایا کہ افتتاحی تقریب میں ریاستی مخلوط حکومت کی کوآرڈی نیشن کمیٹی کے چیرمین و سابق وزیراعلیٰ سدارامیا، نائب وزیراعلیٰ و وزیر داخلہ ڈاکٹر جی پرمیشور مہمانان خصوصی ہوں گے ۔ان کے علاوہ سینئر کانگریس قائد و سابق مرکزی وزیر ڈاکٹر کے رحمن خان ، مرکزی وزراء ، ڈی وی سدانند گوڈا، ایچ این اننت کمار، ریاستی وزیر برائے شہری ترقیات و ہاؤزنگ یو ٹی قادر، سابق وزیراعلیٰ بی ایس ایڈی یورپا، سابق مرکزی وزیر سی کے جعفر شریف، راجیہ سبھا رکن ڈاکٹر سید ناصر حسین، رکن کونسل و سابق مرکزی وزیر سی ایم ابراہیم، پردیش کانگریس کمیٹی کے صدر دنیش گنڈو راؤ، مےئر سمپت راج،لجس لیٹیو کونسل کے اپوزیشن لیڈر کوٹا سرینواسا پجاری، مرکزی حج کمیٹی چیرمین چودھری محبوب علی قیصر مہمانان اعزازی کے طور پر شرکت کریں گے ۔ انہوں نے بتایا کہ امیر شریعت کرناٹک مولانا صغیراحمد خان رشادی، الہاشمی ٹرسٹ وجئے پور کے صدر مولانا سید محمد تنویر ہاشمی، جمعےۃ علمائے کرناٹک کے صدر مولانا مفتی افتخار احمد قاسمی، مولانا محمد لطف اللہ رشادی نقش بندی خطیب مسجد قادریہ ،مولانا محمد حنیف افسر عزیزی خطیب وامام مسجد بیوپاریاں، مولانا محمد مقصود عمران رشادی خطیب وامام سٹی جامع مسجد، مولانا زین العابدین رشادی مظاہری، مہتمم دارالعلوم شاہ ولی اللہ، مولانا محمد شاکر اللہ رشادی خطیب وامام مسجد عیدگاہ بلال بنرگٹہ روڈ اپنے دعائیہ کلمات پیش کریں گے ۔ وزیر موصوف نے بتایا کہ تمام اراکین اسمبلی و کونسل ، عمائدین ،قائدین مختلف اداروں کے عہدیدار ، کارپوریٹرس، مختلف بورڈس وکارپوریشنوں کے چیرمین افتتاحی تقریب میں شرکت کریں گے۔ افتتاحی تقریب کی صدارت مقامی رکن اسمبلی و ریاستی وزیر برائے دیہی ترقیات وپنچایت راج ، قانون و انصاف پارلیمانی امور کرشنا بائرے گوڈا کریں گے ۔جبکہ ریاستی حج کمیٹی کے چیرمین آر روشن بیگ کی نگرانی حاصل رہے گی۔ضمیراحمد خان نے بتایا کہ منگلور میں حج گھر کے لئے ہوائی اڈہ کے قریب جس زمین کی نشاندہی کی گئی تھی وہ حج ہاؤز کے لئے مناسب نہیں ہے ۔ اس کی بجائے شہر کے قلب میں کثیر مسلم آبادی والے علاقے میں ایک ایکڑ زمین کی نشاندہی کی گئی ہے جس کی قیمت 10کروڑ روپئے بتائی جارہی ہے ۔بات چیت کے بعد ممکن ہے کہ زمین کا سودا7کروڑ میں ہوجائے تو اس زمین پر عالیشان حج گھر کے ساتھ شادی محل اور کثیر المقاصد ہال تعمیر کیا جائے گا۔ انہوں نے بتایا کہ حج کے دنوں میں یہ عمارت سال میں صرف5دن استعمال ہوگی بقیہ ایام میں اس کو دیگر مقاصد کے لئے مسلسل استعمال کیا جائے گا۔گلبرگہ حج ہاؤز سے متعلق ضمیراحمد خان نے بتایا کہ اس کا تعمیری کام شروع ہوچکا ہے ، اس کو جلد از جلد پورا کرنے کی کوشش کی جائے گی۔ انہوں نے بتایاکہ حج گھر سے قریب سابق مرکزی وزیر سی کے جعفر شریف کی زمین پر عارضی طور پر حج کیمپ کے دوران اسٹالس لگائے جاتے ہیں ۔اس زمین کا کرایہ وصول کیاجاتا ہے ۔ کرایہ کی رقم جعفر شریف نے خود حاصل کرنے کی بجائے ریاستی حج کمیٹی کے حوالے کی ہے ۔ جعفر شریف کے اس اقدام پر انہوں نے ان کا شکریہ اداکیا۔
وینوگوپال کے حلقہ کے لئے تعاون: ضمیراحمد خان نے بتایا کہ کیرلاکے آڈاپوزا ضلع الپی میں موسلا دھار بارش کی وجہ سے جو تباہی ہوئی ہے یہاں راحت کاری کے لئے ریاست میں کانگریس پارٹی کی سرگرمیوں کے نگران کار کے سی وینوگوپال نے ان سے تعاون کی گزارش کی تھی۔ جس پر انہوں نے اپنے صرفہ خاص سے 50ہزار کلو چاول، 10ہزار کلو شکر،50ہزار افراد کے استعمال کے لئے سامبر پاؤڈر الپی کے لئے روانہ کیا تھا۔ انہوں نے بتایا کہ مزید تعاون کی گزارش پر اتنی ہی مقدار میں مذکورہ اشیاء آج دوبارہ روانہ کی گئی ہیں ۔

Leave a comment

About saheem

Check Also

کروناندھی کی حالت بگڑی –

چنئی (ایجنسیز) تملناڈو کے سابق وزیر اعلیٰ اور ڈی ایم کے کے سربراہ ایم کروناندھی …

جواب دیں

%d bloggers like this: